• اقوام متحدہ نے امید ظاہر کی ہے کہ جنوبی سوڈان میں امن مشن میں اہلکاروں کی تعداد میں آئندہ 48 گھنٹوں میں اضافہ ہو جائے گا۔
  • اقوام متحدہ کی سفیر جانسن نے بھی ایک بار پھر ملک کے سیاسی رہنمائوں پر زور دیا کہ وہ امن کو ایک موقع دیں۔
  • جنوبی سوڈان کے وزیر پٹرولیم کا یہ بیان بھی سامنے آیا ہے کہ باغیوں نے تیل کی چند تنصیبات پر بھی قبضہ کر لیا ہے۔
  • لڑائی کے باعث جنوبی سوڈان کے لگ بھگ پچاس ہزار افراد ملک میں اقوام متحدہ کی تنصیبات میں پناہ لیے ہوئے ہیں۔
  • اقوام متحدہ کے مطابق اب تک کی لڑائی میں ایک ہزار سے زائد افراد مارے جا چکے ہیں۔
  • صدر کیر اس لڑائی کا الزام اپنے سابق نائب صدر ریئک ماچار پر عائد کرتے ہیں جنہوں نے ان کے بقول گزشتہ ہفتے بغاوت کی ناکام کوشش کی تھی۔
  • صدر کیر کا تعلق ڈنکا قبیلے سے ہے جب کہ ان کے مخالف ماچار کا تعلق نیور قبلیے سے ہے۔
  • جنوبی سوڈان میں گزشتہ ہفتے بغاوت کی ناکام کوشش کے بعد سے لڑائی شروع ہوئی تھی۔
  •  اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل بان کی مون نے رواں ہفتے پاکستان کے وزیر اعظم محمد نواز شریف سے ٹیلی فون پر رابطہ کر کے اُن سے جنوبی سوڈان میں سلامتی کی مجموعی صورت حال پر بات چیت کی تھی۔
  • اقوام متحدہ کی امن فوج میں شامل اہلکاروں میں سب سے زیادہ تعداد پاکستان کے باوردی اہلکاروں کی ہے۔

جنوبی سوڈان میں امن فوج کی تعیناتی جلد متوقع

Published December 27, 2013

اقوام متحدہ نے امید ظاہر کی ہے کہ جنوبی سوڈان میں امن مشن میں اہلکاروں کی تعداد میں آئندہ 48 گھنٹوں میں اضافہ ہو جائے گا جب کہ وہاں سرکاری فورسز مالکال کے علاقے نیل پر قبضہ حاصل کرنے کے لیے باغیوں سے لڑائی میں مصروف ہیں۔اقوام متحدہ کی سفیر ہیلڈ جانسن نے دارالحکومت جوبا میں گفتگو کرتے ہوئے امن مشن کے اہلکاروں کی تعیناتی میں "غیر معمولی تیزی" پر زور دیا۔ ان کا کہنا تھا کہ پچاس ہزار سے زائد شہری گزشتہ ہفتے سے جاری لڑائی کے باعث پہلے ہی اقوام متحدہ کی تنصیبات میں پناہ لیے ہوئے ہیں۔