•  تھائی لینڈ میں حزب مخالف کا احتجاج جاری ہے اور اسی صورت حال کے تناظر میں ملک کے الیکشن کمیشن نے عام انتخابات کے انعقاد میں غیر معینہ مدت تک التوا کی درخواست بھی کر دی ہے۔
  • تھائی وزیراعظم ینگ لک شیناواترا نے حزب مخالف کے شدید مظاہروں کے بعد دسمبر میں پارلیمنٹ کو تحلیل کرتے ہوئے دو فروری کو انتخابات کے انعقاد کا اعلان کیا تھا۔
  • وزیراعظم کے اس اعلان کے باوجود مظاہروں کا سلسلہ نہیں رکا ہے اور جمعرات کو پولیس نے انتخابات کی تیاریوں میں خلل ڈالنے والے مظاہرین پر آنسو گیس اور ربڑ کی گولیاں چلائیں۔
  • مظاہرین کی طرف سے پولیس پر پتھراؤ بھی کیا گیا۔
  • مظاہرین کا موقف ہے کہ ملک کی سیاست سے پیسے اور بدعنوانی کے خاتمے کے لیے وزیراعظم کا اقتدار سے علیحدہ ہونا ضروری ہے۔
  • مظاہرین نے جمعرات کو اس سٹیڈیم پر پتھراؤ کیا اور ہلہ بولنے کی کوشش کی جہاں الیکشن کمیشن کا دفتر قائم ہے تاہم پولیس نے انھیں منتشر کر دیا۔
  • پولیس کے ایک ترجمان پیا اوتھایو کا کہنا تھا کہ اس جھڑپ میں 32 مظاہرین اور تین پولیس اہلکار زخمی ہوئے۔
  • وزیراعظم ینگ لک شیناواترا یہ تجویز بھی دے چکی ہیں کہ انتخابات کے بعد بننے والی نئی حکومت کے ساتھ مل کر کام کرنے کے لیے ایک آزادانہ قومی اصلاحاتی کونسل تشکیل دی جائے گی۔
  • حزب مخالف نے اس تجویز کو فوری طور پر مسترد کرتے ہوئے کہا کہ اصلاحاتی عمل انتخابات سے پہلے شروع کیا جائے۔
  • تھائی لینڈ میں سنہ 2010 کے بعد سے سیاسی بحران جاری ہے۔

تھائی لینڈ میں مظاہروں کا سلسلہ جاری

Published December 26, 2013

تھائی لینڈ میں حزب مخالف کا احتجاج جاری ہے اور اسی صورت حال کے تناظر میں ملک کے الیکشن کمیشن نے عام انتخابات کے انعقاد میں غیر معینہ مدت تک التوا کی درخواست بھی کر دی ہے۔ تھائی وزیراعظم ینگ لک شیناواترا حزب مخالف کے شدید مظاہروں کے بعد دسمبر میں پارلیمنٹ کو تحلیل کرتے ہوئے دو فروری کو انتخابات کے انعقاد کا اعلان کیا تھا۔ وزیراعظم کے اس اعلان کے باوجود مظاہروں کا سلسلہ نہیں رکا ہے اور جمعرات کو پولیس نے انتخابات کی تیاریوں میں خلل ڈالنے والے مظاہرین پر آنسو گیس اور ربڑ کی گولیاں چلائیں۔